Mohra Sharif Official Urdu

Mohra Sharif Official Website in Urdu.

پیر جمشید بختؒ

ولیِ کامل حضرت پیر جمشید بخت رحمۃ اللہ علیہ

04

حضرت پیر جمشید بخت ؒ جناب ثانی سرکار مو ہڑویؒ کے چھوٹے صاحبزادے تھے۔ آپ نے رُوحانی تعلیم اپنے والد محترم سے حاصل کی۔ جناب ثانی سرکار موہڑوی ؒ کی ان پر خاص عنایات تھیں کیونکہ آپ صاف گو ، راست باز اور وفار دار تھے۔ اس لئے اپنی زندگی میں ہی حضور نے سب انتظامات متعلق لنگر و گدّی ، عُرس منعقد کرنے، خط و کتابت، غرضیکہ سب انتظام آپ ہی کے سُپرد فرما دیئے تھے۔ اور اکثر لوگوں سے فرمایا کرتے تھے کہ میرے بعد میرا یہ بیٹا آپ لوگوں کی خدمت کریگا۔ تو چند خلفاء نے عرض کی کہ جناب آپ کے سات صاحبزادے ہیں، یہ نہ ہو کہ بعد میں جھگڑا ہو جائے۔ اس لئے آپ ؒ اس کا اعلان فرما دیں۔ لہذا آپؒ نے عُرس مبارک کے موقع پر حضرت پیر جمشید بخت صاحب کی دستار بندی فرمائی اور اعلان فرمایا کہ میرے بعد یہ جانشین ہو گا۔ اس کے علاوہ ایک مرتبہ حضرت پیر جمشید بخت صاحب کے خلوص و خدمت سے اتنے خو ش ہوہے کہ ۹ اکتوبر ۱۹۶۶؁ء کو بدست و بقلم خود بذریعہ تحریری سند اپنا جانشین مقرر فرما دیا۔ بوقت وصال بھی صرف حضرت پیر جمشید بخت صاحب کیلئے فرمائی اور سب اُمور ان کے سُپرد کر کے خالقِ حقیقی سے جا ملے ۔ بوقتِ وصال عُرس مبارک جاری تھا اور تمام ہجوم کو حضرت پیرجمشید بخت صاحب ثانی سرکار موہڑوی کے حضور پیش کرتے رہے اور سب مُریدین کیلئے دُعا کرتے رہے۔ ۱۳ جُون نصف رات تک سب کے لئے دُعا فرماتے رہے اور فرمایا: ’’سب کو مُطلع کر دو، حاضر ہو جائیں میری روانگی صُبح ۴ بجے ہو گی۔‘‘ پونے چار بجے صبح یعنی ۱۴ جوُن ۱۹۷۰؁ء کو پیر جمشید بخت صاحب کو گلے لگا لیا۔ اللہ اللہ کہتے ہوئے یہ آفتاب عالمتاب غروب ہو گیا۔ آپؒ کے وصال کے بعد تمام اُمور حضرت پیر جمشید بخت صاحب نے سنبھال لئے۔

b1

دوسرے دن اُن کے بھائی صاحبان آئے اور اپنے اپنے کاروبار پر روانہ ہو گئے۔ ۱۹ جولائی ۱۹۷۰ء بوقت چہلم  اتفاق رائے سے علاقائی عوام تمام برادری اور ہزاروں عقیدت مندوں کی موجودگی میں حضرت پیر صاحب ’’کہیاں شریف‘‘ نے حضرت پیر جمشید بخت صاحب کی دستار بندی کی رسم ادا فرمائی۔ وصال و تدفین اور سلسلہ نصیریہ ثانی سرکار و فیض قاسمیہ موہڑویہ تاہنوز جاری ہے۔ جس سے ہزاروں عقیدت مند مستفیض ہو رہے ہیں۔

pir jamshad ra 2

آپؒ کو نعت رسول مقبول ﷺ سے بے حد لگاو تھا جہاں محفل نعت ہوتی آپ اس میں ضرور شرکت فرماتے اور نعت رسول مقبول ﷺ اس قدر مگن ہو جاتے کہ آنکھوں سے زاوقطار آنسو جاری ہوجاتے۔
آپؒ نے اپنی حیات کا بیشتر حصہ اپنے مُریدیں کی خدمت میں گزارا اس طرح آپ ؒ بابا جی سرکار موہڑوی ؒ کا پیغام لے کر پنجاب کے بیشتر علاقوں میں گئے اور دینِ محمدیﷺ کی تبلیغ کی اس دوران ہزاروں لوگوں نے آپؒ کے دستِ مبارکہ پر بعیت کی اور لاکھوں عقیدت مندوں کو فیض بخشا۔
آپؒ کے دو صاحبزادے ہیںآپ نے اپنی حیات ہی میں اپنے چھوٹے صاحبزاے سلطان بزر جمہر صاحب کو اپنا جانشین مقرر فرما دیا تھا،اورمُریدین سے فرمایا تھا کہ میرے بعد آپ لوگوں کی خدمت میرا صاحبزادہ سلطان کرے گا۔
ثانی سرکار کے وصال کے 39برس بعد ماہ اکتوبر کی 14تاریخ بروز اتوار سال2005صبح 10بجے آپؒ کا وصال ہوا یہ غوث وقت تقریباََ 50برس تک صبروتوکل اور تبلیغ دین میں زندگی بسر کرکے اپنے خالقِ حقیقی سے جا ملے،بوقت وصال جناب پیر سلطان بزر جمہر صاحب آپ کی خدمت کے لئے آپ کے پاس موجود تھے۔

pir jamshad ra

انا للہ و انا الیہ راجعون

Mohra sharif Official urdu © 2016